پاکستان کی شوبز انڈسٹری میں دیکھا گیا ہے کہ جو بھی اداکار کامیابی کی سیڑھیاں چڑھنا شروع کرتا ہے اس کے رنگ ڈھنگ ہی بدل جاتے ہیں- ایسا ہی فرق معروف اداکارہ عائزہ خان میں بھی محسوس کیا جارہا ہے جنہوں نے 10 سال قبل جب انڈسٹری میں قدم رکھا تھا تو اس وہ ایک عام سی شکل و صورت والی لڑکی معلوم ہوتی تھیں-

تاہم آج اگر ان کا موازنہ ان کی پرانی تصاویر یا کیریر کی شروعات کی تصاویر سے کیا جائے تو مداح حیران ہوئے بغیر نہیں رہتے- ان دس سالوں کے دوران عائزہ خان کے نہ صرف رنگ روپ میں تبدیلی دیکھی گئی ہے بلکہ ان کے لباس کا انتخاب اور چلنے پھرنے اور بات کرنے کا انداز بھی بدل گیا ہے-

شوبز انڈسٹری کے اکثر اداکاروں کو اپنے چہرے میں کشش لانے کے لیے مختلف قسم کی سرجری یا وائٹننگ انجکشن کا سہارا لیتے دیکھا گیا ہے- تاہم عائزہ خان کے رنگ و روپ میں نظر آنے والی تبدیلی کے حوالے سے جب ان سے ایسے کسی ٹریٹمنٹ سے متعلق سوال کیا گیا انہوں نے جواب میں ہمیشہ انکار کیا-

ایسے وقت میں جب اکثر فنکار پرکشش اور خوبصورت نظر آنے کے لیے سرجری کرتے دکھائی دیتے ہیں عائزہ خان ان لڑکیوں کے لیے رول ماڈل کا کردار ادا کرسکتی ہیں جو بغیر کسی ٹریٹمنٹ کے خود کو تبدیل کرنا چاہتی ہیں-

عائزہ خان کے اس وقت اور اب کے ڈریسنگ اسٹائل کے مابین موازنہ کیا جائے تو ہم تصور بھی نہیں کرسکتے کہ عائزہ خان اب پہننے کے لئے بہت سوچ سمجھ انتخاب کرتی ہیں۔ جو پسند بھی کیا جاتا ہے اور وہ ہر لباس میں پراعتماد نظر آتی ہیں۔

یہاں تک کہ عائزہ اس وقت دو بچوں کی ماں بھی ہیں لیکن اس کے باوجود اپنی فٹنس اور صحت کا پورا خیال رکھتی ہیں- پہلے بچے کی پیدائش کے بعد عائزہ خان کا وزن دیگر عورتوں کی مانند کچھ بڑھ گیا تھا تاہم دوسرے بچے کی پیدائش کے بعد وہ پہلے کی طرح اسمارٹ نظر آنے لگیں- جس کا مطلب ہے کہ انہوں نے اس بات کو یقینی بنایا کہ وزن میں کسی صورت اضافہ نہ ہو پائے-

گزرتے وقت کے ساتھ تبدیلی صرف عائزہ خان کے اسٹائل میں ہی نہیں بلکہ ان کی اداکاری میں بھی نکھار پیدا ہوا ہے اور ان دس سالوں کے دوران انہوں نے متعدد سپر ڈرامے پاکستان کی ڈرامہ انڈسٹری کو دیے جس کی حالیہ میرے پاس تم ہو ہے-

Sharing is caring!

شیئر کریں